زمینی راہداری کے ذریعے یمن سے دو ہزار حجاج پر مشتمل عازمین کا پہلا قافلہ مکہ پہنچ گیا

صنعاء (مانیٹرنگ ڈیسک) یمن سے دو ہزار حجاج پر مشتمل عازمین حج کا پہلا قافلہ یمن اور سعودی عرب کے درمیان زمینی سرحدی راہدی الودیعہ کے ذریعے مملکت پہنچا ہے۔الودیعہ سرحدی راہداری یمن اور سعودی عرب کے درمیان حضر الموت کے تاریخی شہر کی جانب سے ملنے والی سرحد پر واقع ہے۔اس راہداری کے ذریعے یمنی ضیوف الرحمان سفری دستاویزات کی جانچ کے بعد سہولت کے ساتھ سعودی عرب داخل ہوئے۔میڈیارپورٹس کے مطابق سرحدی راہداری پر حاجیوں کے لیے ایک آرام گاہ بنائی گئی ہے جہاں سعودی حکام نے اللہ کے مہمانوں کو خوش آمدید کہا۔ استقبالیہ ڈرنکس اور کھانے سے مہمانوں کی تواضع کی گئی۔ استراحہ الحجاج میں اللہ کے مہمانوں کی راحت اور سکون کا مکمل انتظام پایا جاتا ہے۔الودیعہ راہداری آمد کے بعد متعلقہ حج حکام یمن سے آنے والے اللہ کے مہمانوں کو بسوں کے ذریعے مکہ المکرمہ پہنچاتے ہیں جنرل حج ڈائریکٹوریٹ ہر سال حج سیزن کے موقع پر ضیوف بیت اللہ الحرام کی سہولت کے لئے دور دراز سرحدی چوکیوں اور بندرگاہوں پر جدید ٹکنالوجی کو بروئے کار لاتے ہوئے خصوصی انتظام کرتی ہے جہاں اعلی تربیت یافتہ عملہ اللہ کے مہمانوں کی مملکت میں داخلے سے متعلق کاغذی کارروائی کو کم سے کم وقت میں انجام دے کر انہیں اللہ کے گھر اور روضہ رسولؐ زیارت کی سہولت فراہم کرتا ہے۔

اپنا تبصرہ بھیجیں